غزل

رات دن جوش و جنون سے کام ہونا چاہئیے اس دنیا میں اپنا بھی اک نام ہونا چاہئے مٹ نہ جائے اس جہاں سے کہیں ہمت کا نام ان قوس و قزاح کی طرح اپنا بھی مقام ہونا چاہئے چھوڑو بارشوں کے بعد یوں جل تھل کی باتیں بعد از رنگوں کی طرح اپنا بھیContinue reading “غزل”

نہ جانے کیوں میری شاعری کا عنوان بن جاتے ہو تم

نہ جانے کیوں میری شاعری کا عنوان بن جاتے ہو تم سب کچھ جانتے ہوئے بھی انجان بن جاتے ہو تم نہ کوئی رشتہ ہے تم سے نہ کوئی تعلق پھر بھی نہ جانے کیوں میرا مان بن جاتے ہو تم میں جو لکھتا ہوں بات ذرا قرینے سے میرا گیت میری شاعری میرا دیوانContinue reading “نہ جانے کیوں میری شاعری کا عنوان بن جاتے ہو تم”

کوئی غزل سنا کر کیا کرنا

کوئی غزل سنا کر کیا کرنا یوں بات بڑھ کر کیا کرنا تم میرے تھے میرے ہو دنیا کو بتا کر کیا کرنا تم عہد نبھاو چاہت سے کوئی رسم نبھا کر کیا کرنا تم خفا بھی اچھے لگتے ہو پھر تم کو منا کر کیا کرنا تیرے در پہ آ کے بیٹھے ہیں ابContinue reading “کوئی غزل سنا کر کیا کرنا”

Create your website with WordPress.com
Get started